Close
 
 

پابندیاں

 
Skip Breadcrumb

Breadcrumb

 

ہم یہ یقینی بنانے کے لئے پرعزم ہیں کہ ہمارے کاروبار کو تمام پابندیوں کے نظام کی تعمیل میں منظم کیا جائے، اور یہ کہ ہم کسی پابندہ شدہ فریقین کے ساتھ مشغول نہیں ہوں گے۔

پابندیوں میں درج ذیل ممانعتیں یا پابندیاں شامل ہیں:

  • کسی پابندی لگے ملک میں برآمد یا دوبارہ برآمد کرنا۔
  • کسی پابندی لگے ملک سے آنے والی اشیاء یا املاک سے درآمد، یا اس سے متعلق کاروباری معاملات۔
  • کسی پابندی لگے ملک میں یا سے سفر کرنا۔
  • کسی پابندی لگے ملک میں، یا نامزد شدہ فریقین کے ساتھ سرمایہ کاری اور دیگر معاملات۔
  • نامزد شدہ فریقین کو رقوم یا وسائل دستیاب کرنا۔
  • ایک پابندی لگے ملک میں بذریعہ ای میل، ڈاؤن لوڈ یا دورہ کر کے پابند کردہ سافٹ ویئر، تکنیکی ڈیٹا یا ٹکنالوجی کو منتقل کرنا۔
  • بائیکاٹ سرگرمی کی حمایت کرنا۔

پابندیوں کے بارے میں آگاہی اور ان کی تعمیل

ہمیں اپنے کاروبار پر اثر انداز ہونے والے تمام قانونی پابندیوں کے نظاموں سے لازماً واقف ہونا چاہئیے اور ان کی مکمل تعمیل کرنی ہے۔ ہمیں لازماً یہ یقینی بنانا ہے کہ ہم درج ذیل کبھی نہیں کریں گے:
  • کسی بھی فرد کو ہماری مصنوعات فراہم کرنا، یا ہماری مصنوعات فراہم کرنے کی اجازت دینا۔
  • کسی بھی شخص سے سامان خریدنا، یا
  • بصورت دیگر کسی بھی شخص یا املاک سے معاملہ کرنا۔
کسی بھی قابل اطلاق پابندی، تجارتیبندش، ماہر کنٹرول یا دیگر ٹریڈ پابندی کی خلاف ورزی میں۔

پابندیاں انفرادی ممالک یا ماورائے ملک اداروں، جیسے اقوام متحدہ اور یورپی یونین کے ذریعہ عائد کی جا سکتی ہیں۔

کچھ پابندیوں کے نظاموں کا اطلاق امریکی افراد (جہاں بھی واقع ہوں)، ادائیگیوں کے لئے امریکی کرنسی کے استعمال پر اور امریکی ماخذ مصنوعات اور امریکی ماخذ مواد کے ساتھ مصنوعات کی برآمد/دوبارہ برآمد (چاہے ان کو سنبھالنے والا ادارہ ایک امریکی فرد ہو یا نہ ہو) پر ہوتا ہے۔

پابندیوں کی خلاف ورزی پر سنگین سزائیں، بشمول جرمانے، ماہر لائسنس کا نقصان اور قید ہو سکتی ہے۔

خلاف ورزی کے خطرے کو کم سے کم کرنا

گروپ کمپنیوں کے داخلی کنٹرولز کو پابندیوں کی خلاف ورزی کے خطرے کو کم سے کم کرنا چاہئیے، اور تربیت اور معاونت فراہم کرنی چاہئے تاکہ یہ یقینی بنایا جا سکے کہ ملازمین ان کو سمجھیں اور ان کو موثر طور پر نافذ کریں، خاص طور پر جہاں ان کے کام میں بین الاقوامی مالیاتی منتقلیاں یا سرحد پار مصنوعات، ٹیکنالوجیز یا خدمات کی فراہمی یا خریداری شامل ہو۔

پابندیاں اب مزید صرف معاشی، ٹریڈ یا سفارتی پابندیوں کے ساتھ پورے ملکوں کو نشانہ نہیں بناتی ہیں۔ افزوں انداز میں، ان کا مقصد نامزد افراد یا گروہوں، اور ان سے وابستہ کمپنیوں یا تنظیموں کا بھی ہے۔

ممنوعہ ممالک اور نامزد افراد کی فہرست کثرت سے تبدیل ہوتی رہتی ہے۔ اگر ہمارے کام میں بین الاقوامی سرحدوں کے پار مصنوعات، ٹکنالوجیز یا خدمات کی فروخت یا شپمنٹ شامل ہے، تو ہمیں قواعد کے بارے میں تازہ ترین معلومات سے آگاہ رہنا چاہئیے۔

اگر ہمیں پابندی سے متعلقہ مواصلات یا سرکاری اداروں یا اپنے کاروباری شریک کاروں کی طرف سے کوئی درخواستیں موصول ہوں تو ہمیں فوری طور پر اپنے مقامی LEX کونسل کو بھی مطلع کرنا چاہئیے۔ مزید معلومات کے لیے، انٹریکٹ پر پابندیوں کی تعمیل کا طریقہ کار دیکھیں۔

کس سے بات کریں

آپ کا لائن مینیجر
اعلٰی انتظامیہ
آپ کی مقامی LEXکونسل
کمپلائنس کے سربراہ
()